396

بھارتی ریسلر کویتاکی شلوار قمیض پہنے ویڈیو وائرل

بھارتی ریاست ہریانا سے تعلق رکھنے والی کویتا دیوی نے ڈبلیو ڈبلیو ای کے ریسلنگ رنگ میں شلوار قمیض پہن کر رنگ جما دیا۔ کویتا کی پہلی کشتی نیوزی لینڈ کی ڈکوٹا کائی کے خلاف تھی جس کی ویڈیو انٹرنیٹ پر وائرل ہوگئی اور یو ٹیوب پر اسے 5 دن کے اندر 35 لاکھ سے زائد افراد نے دیکھا، کویتا پہلی بھارتی خاتون ریسلر ہیں جو مشہور زمانہ امریکا کے ریسلنگ مقابلے ڈبلیو ڈبلیو ای تک پہنچی ہیں۔ واضح رہے کہ ہریانہ سے تعلق رکھنے والی کویتا ایک موقع پر حالات کے ہاتھوں اتنی مجبور ہوگئی تھیں کہ انہوں نے خودکشی کی بھی کوشش کی تھی۔ اس حوالے سے کویتا نے بتایا کہ جب میرا بچہ 8 سے 9 مہینے کا تھا تب میرے گھر والوں کی طرف سے بھی کوئی مدد نہیں مل رہی تھی، ایک وقت ایسا بھی آیا تھا جب میں نے کھیل چھوڑنے کا فیصلہ کرلیا تھا کیونکہ میں گھر، اولاد اور کھیل کے درمیان توازن نہیں کر پا رہی تھی۔ میں کھیلنا چاہتی تھی لیکن میرے شوہر کو یہ منظور نہیں تھا، شاید اس وقت ان پر خاندان کی ذمے داریوں کا بوجھ تھا لیکن آج انھیں مجھ پر فخر ہے اور وہ میرا ساتھ دیتے ہیں۔ اس سوال پر کہ ڈبلیو ڈبلیو ای میں شلوار قمیض پہن کر لڑنے کا کیا مقصد تھا تو انہوں نے کہا کہ میں اپنے ملک کی تہذیب کو بڑھاوا دینا اور یہ بتانا چاہتی تھی کہ کپڑے ریسلنگ میں آڑے نہیں آتے، کویتا ویٹ لفٹنگ میں قومی اور بین الاقوامی سطح پر کئی اہم ٹائٹلز جیت چکی ہیں۔ وہ ڈبلیو ڈبلیو ای کے سابق چیمپئن دا گریٹ کھلی سے ریسلنگ کی تربیت لیتی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں