390

سہ ماہی ’’فردا ‘‘ ایک نظر میں

(ڈاکٹر مشتاق عادل )

ساہیوال ڈویژن کی انتظامیہ نے ’’فردا‘‘ کے نام سے ایک سہ ماہی پرچے کا آغاز کیا ہے جو جہاں کمشنر ساہیوال کی ادب دوستی اور چوہدری محمد رفیق ADCRساہیوال ڈویژن کی محنت کا منہ بولتا ثبوت ہے وہاں ساہیوال ڈویژن کی انتظامیہ کی کارکردگی رپورٹ بھی ہے اور اس تاریخی خطے کے حوالے ایک معلوماتی دستاویز بھی۔
شمارے کے شروع میں کمشنر ساہیوال بابر حیات تارڑ کا مضمون اداریہ کی شکل میں شائع کیا گیا ہے۔ پھر مشعل راہ کے عنوان سے حمد اور نعت ہے۔ اس کے بعد ساہیوال ڈویژن کے حوالہ سے کچھ اہم اعداد شمار درج کیے گئے ہیں۔پھر’’ عکس ماضی‘‘ کے عنوان سے چوہدری محمد رفیق کے تحریر کردہ مضمون ’’عکس ماضی‘‘ میں چیچہ وطنی شہر کامکمل تعارف کروایا گیا ہے۔ ساہیوال ڈویژن کا موجودہ انتظامی ڈھانچہ بھی ایک اہم معلوماتی کاوش ہے۔ اس کے بعد گذشتہ تین ماہ میں ڈویژنل انتظامیہ کی طرف سے ہوے والی اہم سرگرمیوں کو تصویری خبرنامہ کے طور پر شائع کیا گیا ہے۔
اس شمارے میں زراعت آفیسر وسیم انور کے زراعت سے متعلق معلوماتی مضمون:بعنوان’’کپاس کی پیداواری ٹیکنالوجی ‘‘ اور ’’گندم کی برداشت اور سنبھال ‘‘شامل ہیں۔ اس کے بعد بہادر نگر فارم کے حوالے سے ڈاکٹر محمود اعجاز گورسی کا مضمون شامل کیا گیا ہے۔ پھر عثمان علی راجہ کا لکھا ’’اربن یونٹ کا تعارف‘‘ چھپا ہے اور اس کے بعد محمد عقیل اشفاق کا لکھا’’ساہیوال آرٹس کونسل ۔۔۔۔ایک تعارف‘‘چھپا ہے۔ پرچے میں اقلیتوں کی نمائندگی کے طور پر امانت مسیح گِل کی تحریریں ’’علاقہ کی ترقی میں مسیحی برادری کا کردار‘‘ اور ’’کھیل اور کھلاڑی ‘‘شامل کی گئی ہیں۔پھر گذشتہ ادب ہے جس میں طارق رضا ، حکیم جمشید کمبوہ، حاجی بشیر احمد، ادریس قمر، ظفر اقبال اور محمد نعیم بھٹی کا کلام شامل ہے جو ایک عمدہ کاوش ہے ۔ اس کے بعد چوہدری محمد رفیق ADCRساہیوال ڈویژن کا بہت دلچسپ اور معلوماتی مضمون ’’امر ربی‘‘ کے عنوان سے چھپا ہے۔ پھر محکمہ سوشل ویلفئیر کے زیر انتظام چلنے والے ادارے ’’صنعت زار‘‘ کا تعارف کروایا گیا ہے۔ آخری حصے میں صحت کے حوالے سے ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز ساہیوال ڈاکٹر صادق سلیم کمبوہ کا مضمون ’’چھاتی کا کینسر ‘‘اور شعبہ امراض اطفال کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر محمد وقار ربانی کامضمون ’’بچوں کی نشونما اور غذائی قلت‘‘شامل کیے گئے ہیں۔ آخر میں اگلے شمارے میں شامل متوقع موضوعات کا اندراج کیا گیا ہے اور بیک ٹائیٹل پر ساہیوال ڈویژن کا نقشہ شائع ہو اہے۔ اس شمارے کی خوبصورتی کو آرٹ پیپر پر فوکلر میں شائع کر کے چار چاند لگا دیے گئے ہیں۔ سب سے بڑھ کر متاثر کن مختلف تصاویر ہیں جو قاری کے لئے پر کشش ثابت ہوتی ہیں۔ اگر یہ سلسلہ چلتا رہا اور اس کی باقاعدہ اشاعت پر توجہ دی گئی تو یہ ایک اہم معلوماتی اور ادبی دستاویز شمار ہو گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں